Ask @Alizafar241:

میں لفظوں کا تھا جادوگر تو احساسوں کی تھی رانائ سراپا میں تھا پاگل پن سراپا توتھی دانائی تو ہنگامہ ' میں ویرانہ تو محفل تھی میں تنہائی عجب اپنا تعلق تھا میں آنکھیں تھا تو بینائی مگر قسمت میں لکھا تھا نہ تو میری نہ میں تیرا بڑی واضح حقیقت تھی حیاء کی پاسداری میں محبت ہار جاتی ہے

ع سے عمیر
پڑھی نماز جنہاں عشق والی
بار بار نہیں اوہ وضو کردے
نیّت صاف کرکے جیہڑے نیت لیندے
سجدہ یار اگے رو برو کر دے
تصوّر یار دا رکھ کے وچ دل دے
نال اوہدے گفتگو کر دے
عشقی دنیا تے عقبیٰ چھڈ دیندے
باہجوں یار نہیں ہور جستجو کردے

View more

Next