Ask @Madiha12345086:

تجھ کو دیکھوں تو نگاہیں نہ ہٹانا چاہوں اک لمحے پہ ٹھہر جائے زمانہ چاہوں ۔ ۔ ۔ تجھ سے اک ربطِ خیالی ہی سہی ربط تو ہے میں تو اک سہل سا جینے کا بہانا چاہوں ۔ ۔ ۔ درد اٹھے تو اسے وہم سے تعبیر کروں میں بہرطور تیرا نام چھپانا چاہوں ۔ ۔ ۔ دن گزاروں تیری یادوں کی حسین وادی میں رات آئے تو یہی خواب سہانا چ

Next