Ask @laibaahsan246:

جانے کیا بھیڑ ہے میرے اندر ۔ لہو تک اب رواں نہیں ہوتا ۔ کچھ بھی کر لیجیے پر بندہ آپ سے بدگماں نہیں ہوتا ۔ صرف ہم تب تلک نبھائیں گے ۔ جاں کا جب تک ذیاں نہیں ہوتا ۔ درو دیوار سے لپٹے ہیں ۔ جب کوئی راز داں نہیں ہوتا ۔ تم پہ گزری ہے تم کہوں ابرک ۔ ہم سے اگے بیاں نہیں ہوتا ۔ 💔

мυнαммαɒ вɪℓαℓ ĸнαи ❤

Sad poetry

Abdus Saboor Khan✅
ہنسنے نہیں دیتا کبھی رونے نہیں دیتا
یہ دل تو کوئی کام بھی ہونے نہیں دیتا
تم مانگ رہے ہو مرے دل سے مری خواہش
بچہ تو کبھی اپنے کھلونے نہیں دیتا
میں آپ اٹھاتا ہوں شب و روز کی ذلت
یہ بوجھ کسی اور کو ڈھونے نہیں دیتا
وہ کون ہے اس سے تو میں واقف بھی نہیں ہوں
جو مجھ کو کسی اور کا ہونے نہیں دیتا ❣

View more

Next